Dr. Khalid Mazkoor

Dr. Khalid Mazkoor

‘‘میں کھلے دل سے اعتراف کرتا ہوں کہ‘‘اسلامک فقہ اکیڈمی انڈیا ’’کی خدمات عظیم ہیں، اس کی حیثیت ہندوستان میں جدید مسائل کے حل کے سلسلہ میں مرجع کی ہے، تقریبا ً ۲۵سالوں سے اکیڈمی مسلسل شرعی مسائل کے حل کے لئے کوشاں و سرگرداں ہے، ہندوستان کے باکمال علماء و فقہاء کا اسے بھرپور تعاون حاصل ہے۔ اکیڈمی کا علمی میدان وسیع و عریض ہے، ایک طرف تحقیق و دراسہ کا کام ہے، تو دوسری طرف نوجوان فضلاء کی فکری و علمی تربیت ہے، الغرض تمام جہتوں میں اکیڈمی کی کوششیں قابل صد ستائش ہیں۔

اللہ تعالی قاضی مجاہد الاسلام قاسمیؒ صاحب کو غریق رحمت کرے، انہوں نے ایک ایسی اکیڈمی کی بنیاد ڈالی جو آج اپنی افادیت میں اپنی مثال آ پ ہے، وزارت اوقاف سے شائع شدہ ‘‘فقہی انسائیکلوپیڈیا’’(الموسوعۃ الفقہیہ) کا اردو ترجمہ بھی اکیڈمی بحسن و خوبی انجام دے چکی ہے۔

الحمد للہ اس کے بعض سمیناروں میں مجھے شرکت کا موقع ملا، میں نے برصغیر میں ہوئے سمیناروں میں اسے سب سے بہتر اور مفید پایا،میں اس بات کی تصدیق کرتا ہوں کہ اکیڈمی کے علمی امور کی بہتات ہے، جہاں اسے اہل علم کے تعاون کی ضرورت ہے، تاکہ وہ اسلام اور مسلمانوں کی خدمت بہتر طور پر انجام دے سکے۔

یہاں یہ تذکرہ بے جا نہ ہوگا کہ کویت کے علماء ، فقہاء، ارباب دانش، اساتذہ وشیوخ اور وہاں کے ملی و دینی اداروں سے اکیڈمی کے گہرے روابط ہیں’’۔

ڈاکٹر خالد عبد اللہ المذکور ( کویت)

(صدر لجنۃ تطبیق شریعت)